بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

نئے مکان کی بنیاد میں صدقے کے بکرے کا خون ڈالنا

نئے مکان کی بنیاد میں صدقے کے بکرے کا خون ڈالنا

سوال

کیا فرماتے ہیں مفتیانِ کرام مندرجہ ذیل  مسئلہ کے بارے میں کہ میں اپنا گھر بنانا چاہتا ہوں اس کے لیے بکرا صدقہ کرنا چاہتا ہوں بکرا ذبح کرکے خون بنیادوں میں ڈالا جائے یا زندہ بکرا کسی مستحق کو دے دیا جائے؟شریعت کی روشنی میں رہنمائی فرمائیں۔

جواب

بکرا صدقہ کرنے میں آپ کو دو باتوں کا اختیار ہے، چاہے زندہ بکرا کسی صحیح مصرف تک پہنچا دیں یا ذبح کرکے اس کو مستحقین میں تقسیم کر دیں؛لیکن اس کا خون بنیادوں میں ڈالنا محض رسم ہے،شریعت میں اس کی کوئی حیثیت نہیں۔ فقط واللہ اعلم بالصواب

دارالافتاء جامعہ فاروقیہ کراچی