بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

قبر گر جائے یا اندر دب جائے تو کیا کیا جائے

قبر گر جائے یا اندر دب جائے تو کیا کیا جائے

سوال

کیا فرماتے ہیں مفتیانِ کرام مندرجہ ذیل  مسئلہ کے بارے میں کہ میت دفن کرنے کے بعد گرجانے کی صورت میں کیا حکم ہے ؟ اسی کے اوپر مٹی ڈال دی جائے ،یا پھر دوسری مرتبہ یا دوسری قبر کھود کر اس میں دفن کیا جائے ؟

جواب

قبر کے گر جانے کی صورت میں  مٹی ڈال کر اسکو ہموار کر دیا جائے،لہذا صورت مسئولہ میں میت کو نکال کر دوسری جگہ منتقل کرنا جائز نہیں۔

وفي الدر مع الرد:

قوله: ولاينبش ليوجه إليها) أي لو دفن مستدبراً لها وأهالوا التراب لاينبش؛ لأن التوجه إلى القبلة سنة، والنبش حرام، بخلاف ما إذا كان بعد إقامة اللبن قبل إهالة التراب فإنه يزال ويوجه إلى القبلة عن يمينه حلية عن التحفةاهـ.(كتاب الصلوة،باب صلاة الجنازة:2/236،ط:رشيدية).فقط واللہ اعلم بالصواب

دارالافتاء جامعہ فاروقیہ کراچی

فتوی نمبر: 174/72,79