جامعہ فاروقیہ کراچی ۔۔ انٹرنیشنل اسلامک یونی ورسٹی

جامن موسم برسات کا مفید پھل

محترمہ زینب بی بی

قدرت نے جامن میں اتنی زیادہ خوبیاں سمو دی ہیں کہ اسے آم کے بعد گرمیوں کا دوسرا اہم ترین پھل قرار دیا جاسکتا ہے۔ اس پھل کا تعلق امرود اور لونگ کے خاندان سے ہے۔ پاکستان کے علاوہ جامن ہندوستان، برما، تھائی لینڈ، فلپائن، جنوبی کیلی فورنیا اور جنوبی فلوریڈا میں پائی جاتی ہے۔ ہمارے ہاں جامن کی دو اقسام عام ملتی ہیں۔ ایک قدرے چھوٹی ہوتی ہے، جس میں گودا کم اور گٹھلی بڑی ہوتی ہے۔ دوسری قسم کی جامن میں گودا زیادہ اور گٹھلی چھوٹی ہوتی ہے۔ یہ گرم مرطوب آب وہوا میں پھلتی پھُولتی ہے۔

قدرت نے جامن میں بہت سے فائدے رکھے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ معالج اس کے پتوں اور درخت کی چھال کو صدیوں سے مختلف امراض کے علاج کے لیے استعمال کر رہے ہیں۔ اس کی جڑ اور گٹھلی بھی کام میں لائی جاسکتی ہے۔

جامن غذائیت سے بھرپور پھل ہے، جس میں حیاتین الف اور ج (وٹامنز اے اور سی) فاسفورس، کیلشیم اور فولاد وافر مقدار میں پایا جاتا ہے۔

چہرے کی رنگت نکھارے
کچھ لڑکیاں چہرے پر کیل مہاسوں کی وجہ سے پریشان رہتی ہیں۔ انہیں چاہیے کہ جامن کے موسم میں جامن روزانہ کھائیں، اس لیے کہ اس میں موجود مانع تکسیداجزا ( ANTIOXIDANTS) چہرے کے داغ دھبّوں اور چھائیوں کو ختم کرکے رنگ نکھارنے میں معاون ہیں۔

بلڈ پریشر کو قابو میں رکھے
بلڈ پریشر کے مریضوں کو چاہیے کہ وہ جامن ضرو رکھائیں۔ اس میں موجود پوٹاشیم کی وافر مقدار بلڈ پریشر پر قابو پانے میں مدد گار ثابت ہوتی ہے۔

قلب دوست پھل
جامن کا کاسنی رنگ ایک فوٹو کیمیکل مادّے ”اینتھوسیانن“ (ANTHOCYANIN) کی وجہ سے ہوتا ہے ، جو قلب کی شریانوں میں خون کی روانی کو بہتر کرتا ہے، اس لیے اسے قلب دوست پھل کہا جاتا ہے۔

ذیابیطس میں مفید
ذیابیطس کے روایتی علاج میں جامن کو برسوں سے خاص اہمیت حاصل ہے۔ یہ لبلبے(PANCREAS) پر مثبت اثرات مرتب کرتی ہے۔ روزانہ جامن کھانے سے ذیابیطس کے باعث پیدا ہونے والے مسائل کم ہو جاتے ہیں او رخون میں گلوکوس کی سطح بھی معمول پر آجاتی ہے۔

وزن کرے کم
غذائی اجزا زیادہ اور حرارے (کیلوریز) کم ہونے کی وجہ سے یہ پھل وزن کم کرنے میں اہم کردار ادا کرتا ہے، اس لیے دبلا ہونے کے خواہش مند مردوخواتین کے لیے یہ ایک نعمت سے کم نہیں۔

تعدیے سے حفاظت
جامن ایک ترش پھل ہے، جس کا یہ ذائقہ اس کے تیزابی خواص کی وجہ سے ہے۔ اس کی یہ خصوصیت ہمیں تعدیے (انفیکشن) سے محفوظ رکھنے میں بھی معاون ثابت ہوتی ہے ۔

جامن ے ہڈیاں مضبوط
جامن میں موجود کیلشیم اور فولاد کی وافر مقدار ہڈیوں کو مضبوط کرتی اور بیماری کے خلاف قوتِ مدافعت بڑھاتی ہے۔

احتیاطی تدابیر
جامن کھاتے وقت چند احتیاطی تدابیر کا ضرو رخیال رکھیں۔ یہ تدابیر ذیل میں درج کی جارہی ہیں:

٭…جامن کھانا کھانے کے بعد کھائیں، اس لیے کہ یہ ہاضمے میں معاون ثابت ہوتی ہے۔ؤ…زچگی کے بعد خواتین جامن کھانے سے پرہیز کریں، اس لیے کہ اس عرصے میں معا لجین ایسی اشیا کھانے سے منع کرتے ہیں، جو ریاح یا مروڑ کا سبب بنیں۔ جامن سمیت تمام ترش پھل اس کا باعث بنتے ہیں۔ؤ…جن لوگوں کے جسم پر سوجن ہو یا انہیں متلی کی شکایت ہو، وہ بھی جامن کھانے سے اجتناب کریں۔ؤ…جامن کھانے سے پہلے اس پر تھوڑا سا کالانمک چھڑک لیں، اس سے یہ نہ صرف خوش ذائقہ ہو جاتی ہے، بلکہ ہضم کرنے میں بھی مدد دیتی ہے۔ؤ…زیادہ پکی ہوئی جامن کھانے سے بھی معدے میں تیزابیت اور ریاح پیدا ہو سکتا ہے، اس لیے ایسی جامن کھانے سے پرہیز کریں۔ؤ… جامن کھانے کے بعد دودھ بالکل نہ پییں یا دودھ پینے کے بعد جامن نہ کھائیں ، اس لیے کہ یہ صحت کے لیے فائدہ مند نہیں۔



English
عربي

ابتداء
اپنے بارے میں
جامعہ فاروقیہ
الفاروق
اسلام
قرآن
کتب خانہ
منتحب سائٹس
This site is developed under the guidance of eminent Ulamaa of Islam. 
Suggestions, comments and queries are welcomed at info@farooqia.com
ابتداء  |  اپنے بارے میں  |  جامعہ فاروقیہ  |  الفاروق  |  اسلام  |  قرآن  |  کتب خانہ  |  منتخب سائٹس
No Copyright Notice.
All the material appearing on this web site can be freely distributed for non-commercial purposes. However, acknowledgement will be appreciated.