جامعہ فاروقیہ کراچی ۔۔ انٹرنیشنل اسلامک یونی ورسٹی

رحمت، برکت اور مغفرت کا مہینہ

عبید اللہ خالد

اسلامی مہینوں میں رمضان المبارک کو سب سے زیادہ فضیلت حاصل ہے اور اس میں الله تعالیٰ کی رحمتوں اوربرکتوں کا خصوصی نزول ہوتا ہے۔ احادیث مبارکہ میں رمضان المبارک کے بہت زیادہ فضائل وارد ہوئے ہیں۔ حضرت سلمان فارسی رضی الله عنہ سے ایک روایت مروی ہے کہ ”رسول الله صلی الله علیہ وسلم نے شعبان المعظم“ کے آخری دن ہمیں خطبہ دیتے ہوئے ارشاد فرمایا کہ اے لوگو! ایک عظمت وبرکت والا مہینہ تمہارے اوپر سایہ فگن ہو رہا ہے، یہ وہ مہینہ ہے کہ جس میں ایک ایسی رات ہے جو ہزار مہینوں سے بہتر ہے۔ الله تعالیٰ نے اس مہینے کے روزے کو فرض قرار دیا ہے اور اس کی راتوں میں قیام کو نقل قرار دیا ہے، جو شخص اس ماہ مبارک میں نیکی (نفل) کے عمل سے الله تعالیٰ کی بارگاہ میں تقرب حاصل کرے گا تو وہ اس شخص کی مانند ہوتا ہے جس نے رمضان کے علاوہ کسی دوسرے مہینے میں فرض ادا کیا ہو اور جس شخص نے رمضان کے مہینے میں (بدنی یا مالی) فرض ادا کیا تو وہ اس شخص کی مانند ہو گا جس نے رمضان کے علاوہ کسی دوسرے مہینے میں ستر (70) فرض ادا کیے ہوں۔ یہ صبر کا مہینہ ہے اور اس صبر کا ثواب جنت ہے ، یہ غم خواری کا مہینہ ہے اور یہ وہ مہینہ ہے جس میں مؤمن کا رزق بڑھا دیا جاتا ہے، جو شخص اس مہینے میں کسی روزہ دار کو افطار کرائے گا تو اس کا یہ عمل اس کے گناہوں کی بخشش ومغفرت کا سبب اور دوزخ کی آگ سے حفاظت کا ذریعہ ہوگا اور اس کو روزہ دار کے ثواب کے برابر ثواب ملے گا، بغیر اس کے کہ روزہ دار کے ثواب میں کمی ہو۔ ہم نے عرض کیا کہ اے الله کے رسول! ہم سب تو روزہ دار کو افطار کرانے کی استطاعت نہیں رکھتے؟ آپ صلی الله علیہ وسلم نے فرمایا کہ یہ ثواب الله تعالیٰ اس شخص کو بھی عنایت فرماتے ہیں جوکسی روزہ دار کو ایک گھونٹ لسی، ایک کھجور یا ایک گھونٹ پانی کے ذریعہ افطار کرادے، اور جو شخص روزہ دار کو پیٹ بھر کر کھلائے گا تو الله تعالیٰ اس کو میرے حوض (حوض کوثر) سے اس طرح سیراب کرے گا کہ وہ ( اس کے بعد) پیاسا نہیں ہو گا، یہاں تک کہ وہ جنت میں داخل ہوجائے ۔ یہ وہ مہینہ ہے کہ جس کا ابتدائی حصہ رحمت ، درمیانی حصہ بخشش اور آخری حصہ دوزخ کی آگ سے نجات ہے ۔ جو شخص اس مہینے میں اپنے غلام وباندی کا بوجھ ہلکا کرے گا تو الله تعالیٰ اسے بخش دے گا اور اسے آگ سے نجات عطا فرمائے گا۔“(شعب الایمان للبیہقی)

دیکھیے اس ایک ہی روایت میں رمضان المبارک کی کتنی زیادہ عظمت ورفعت اور برکت وبڑھائی بیان کی گئی ہے۔ ویسے تو ایک صاحب ایمان انسان کو اپنی زندگی کا ہر لمحہ الله تعالیٰ کی عبادت وبندگی میں صرف کرنا چاہیے اور اسی کے حکم کو بجالانے کی ہر وقت فکر کرنی چاہیے لیکن خصوصاً وہ اوقات اور ایام کہ جن کی عظمت ورفعت اور برکت وبڑھائی کو الله اور اس کے رسول نے خود بیان کر دیا ہو تو ایک صاحب ایمان کو اس برکت وخیر کے حصول میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینا چاہیے اور ان اوقات میں بندگی وعبادت کا خوب اہتمام کرنا چاہیے۔ چناں چہ رمضان المبارک میں روزے ونماز اور دیگر فرائض کے ساتھ ساتھ نوافل، ذکرواذکار، تلاوت قرآن، دعاء والحاح اور صدقہ وزکوٰة غرض تمام امور خیر کا خوب اہتمام کرنا چاہیے۔ الله تعالیٰ ہمیں رمضان المبارک کی قدرومنزلت پہچاننے اور اس میں اعمال صالحہ اختیار کرنے کی توفیق عطا فرمائے۔ آمین!



English
عربي

ابتداء
اپنے بارے میں
جامعہ فاروقیہ
الفاروق
اسلام
قرآن
کتب خانہ
منتحب سائٹس
This site is developed under the guidance of eminent Ulamaa of Islam. 
Suggestions, comments and queries are welcomed at info@farooqia.com
ابتداء  |  اپنے بارے میں  |  جامعہ فاروقیہ  |  الفاروق  |  اسلام  |  قرآن  |  کتب خانہ  |  منتخب سائٹس
No Copyright Notice.
All the material appearing on this web site can be freely distributed for non-commercial purposes. However, acknowledgement will be appreciated.